وزیرِاعظم عمران خان کی طرف سے طلبا یونین کی بحالی اور اِس سلسلے میں قواعد و ضوابط کی تشکیل کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان

وزیرِاعظم عمران خان کی طرف سے طلبا یونین کی بحالی اور اِس سلسلے میں قواعد و ضوابط کی تشکیل کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ ناظم اعلیٰ اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان

طلبا یونین کی بحالی سالہا سال سے اسلامی جمعیتِ طلبہ کا دیرینہ مطالبہ رہا ہے۔ یہ ہمارا آئینی حق ہے۔ محمد عامر

ناظم اعلی اسلامی جمعیت طلبہ پاکستان محمد عامر نے طلبہ یونین کی بحالی کے لئے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم اعظم عمران خان کا طلبہ یونین کی بحالی پر عملی اقدامات کرنے کا فیصلہ قابل ستائش ہے۔ جیسا کہ ماضی میں وزیراعظم نے پہلے کرپشن کو موضوع بناکر پاکستان کا منفی تاثر پوری دنیا میں پھیلایا اب طلبہ تنظیموں کو تشدد کی علامت قرار دیاجارہاہے۔ کیا یہ ضروری ہے کہ ہرمعاملے میں پاکستان کا منفی پہلو ہی دنیا کے سامنے پیش کیا جائے۔
9 فروری 1984 سے طلبہ یونین پر پابندی کی وجہ پاکستان کے تعلیمی اداروں میں معیار تعلیم پست ہوا اور طلبہ کے حقوق پر نقب لگائی گئی۔ سٹوڈنٹس
کو ایک پلیٹ فارم مہیا کیا جائے جس کے سائے تلے وہ اپنے حقوق کی آواز بلند کرسکیں۔جس طرح ہر طبقہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے لوگ اپنی یونیین رکھتے اور اپنے مسائل کے حل کے لیے آکھٹے ہوتے ہیں تو ملک پاکستان کا سب سے اہم طبقہ نوجوان طالب علم اس سہولت سے محروم کیوں یہ طلبہ کا بنیادی اور آئینی حق ہے کہ وہ جس نظام میں ووٹ کاسٹ کرتے ہیں اسی میں اپنے حقوق کے لئے طلبہ یونین کا قیام بھی عمل میں لایا جائے۔ یونین اور طلبہ تنظیمیں جمہوریت کی نرسری ہیں جن کے بغیر جمہوریت مضبوط نہیں ہوسکتی۔ یونین کی بحالی کے مطالبے پردائیں اور بائیں بازو کی تمام تنظیمیں متفق ہیں۔ ہمارے درمیان کسی قسم کا کوئی اختلاف نہیں ہے۔ ہم طلبہ یکجہتی مارچ میں یونین کی بحالی سمیت طلبہ مسائل پر مشتمل تمام مطالبات کی مکمل حمایت کرتے ہیں اور درخواست کرتے ہیں کہ گرفتار کیے گئے تمام سیاسی کارکنوں کو رہاکیاجائے اور ان پر درج تمام مقدمات واپس لیے جائیں۔
طلبہ یونین کے لیے ضابطہ اخلاق کی تیاری کے لیے اسلامی جمعیت طلب 8 دسمبر کو لاہور میں تمام طلبہ تنظیمات کا اجلاس بلائے گی۔ اس اجلاس میں ضابطہ اخلاق کی تیاری کے حوالے سے مشاورت کی جائے گی اور آئندہ کا متفقہ لائحہ عمل پیش کیا جائے گا۔

By | 2019-12-05T11:54:58+00:00 December 5th, 2019|Latest News|0 Comments

Leave A Comment