اسلامی جمعیت طلبہ نے ہر دور میں طلبہ مسائل کو اپنی ترجیحات میں شامل رکھا ہے – شکیل احمد

اسلامی جمعیت طلبہ نے ہر دور میں طلبہ مسائل کو اپنی ترجیحات میں شامل رکھا ہے اور ان مسائل کے حل کے لئے اپنی بساط بھر کوششیں بھی کرتی رہی ہے ،کبھی تو ان کوششوں کے نتیجے میں مسائل حل ہو گئے اور کبھی حل نا ہو سکے ۔
گزشتہ کچھ سال سے حالات یکسر بدل چکے ہیں اور ان مسائل کے حل کی راہ میں ایک بڑی رکاوٹ خود آج کا طالبعلم ہے جسے فیسوں میں اضافہ سے تھوڑی پریشانی تو ہے مگر وہ فیس اپنے والد سے لا کر ادا کر رہا ہے وہ اس کے خلاف مزاحمت نہیں کرنا چاہتا ،تعلیمی بجٹ میں کٹوتی،طلبہ یونین کی اہمیت ،وغیرہ کا معاملہ بھی اس ضمن میں ایسا ہی ہے نیز اساتذہ کرام بھی اس حوالے سے اپنا کردار ادا کرنے سے معذور ہیں جبکہ ماضی میں صورتحال اس کے برعکس تھی اور اسکے بہت سارے عوامل بھی ہیں۔
موجودہ حکومت نے دیگر شعبہ ہائے زندگی کے ساتھ ساتھ تعلیم کےشعبہ کو بھی تباہ کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی اور اسکی چھوٹی سی مثال محکمہ اعلٰی تعلیم کے بجٹ میں کٹوتی ،سکالر شپ کی بندش ،فیسوں میں بے تحاشہ اضافہ ہے۔
اب اس ساری صورتحال میں جمعیت غیر جانبدار نہیں رہ سکتی اسی لئے ہم نے فیصلہ کیا کہ ہم ان سارے مسائل کی اہمیت کو اجاگر بھی کریں ،رائے عامہ کو ہموار بھی کریں،طلبہ کو اپنے ساتھ ملا کو ان مسائل کو حل کرانے کی کوشش کریں
تعلیمی ریفرنڈم اسی سلسلہ کی ایک کڑی ہے جو بھر پور انداز میں منعقد ہو گا ۔ان شاء اللہ

شکیل احمد

ناظم اسلامی جمعیت طلبہ صوبہ خیبر پختونخوا

By | 2020-11-10T22:12:30+00:00 November 10th, 2020|Blog, Latest News|0 Comments

Leave A Comment