اسلامی جمعیت طلبہ حیدرآباد ڈویژن اور مقام کی میزبانی میں طلبہ تنظیموں کی آل پارٹیز کانفرنس

اسلامی جمعیت طلبہ حیدرآباد ڈویژن اور مقام کی میزبانی میں طلبہ تنظیموں کی آل پارٹیز کانفرنس بلا گئی جس میں مختلف طلبہ تنظیموں کے نمائندگاہ نے شرکت کی اے پی سی میں طلبہ تنظیموں نے سات نکاتی ایجنڈے پر پر اتفاق کیا۔ اے پی سی میں مطالبہ کیا گیاکہ تمام جامعات کی فیسوں میں پچاس فیصد کمی کی جائے جبکہ ہاسٹل، ٹرانسپورٹ اور دیگر اضافی فیسیں معاف کی جائیں۔ آن لائن کلاسسز کو بہتر بنایاجائے اور یکساں سہولتیں فراہم کی جائیں۔حیدرآباد میں یونیورسٹی کا قیام صرف زبانی نہیں بلکہ عملی قیام کیاجائے ۔جامعہ حیدرآباد کے لیے خصوصی فنڈز مختص کیے جائیں اس سلسلے میں اے پی سی میں شریک تمام طلبہ تنظیموں کا مشترکہ وفد گورنر سمیت دیگر اعلی حکام سے ملاقاتیں کرے گا ۔اجلاس میں طلبہ تنظیموں نے موف اپنا یا کہ حکومت نے میٹرک تا انٹر کلاس تک کے طلبہ کو پروموٹ کرنے کا فیصلہ کیا ہے لیکن اس صورتحال میں پروموٹ کرنے والے طلبہ کے لیے کوئی پالیسی ترتیب نہیں دی گئی ہے اس حوالے سے طلبہ کا وفد کنٹرول سے ملاقات کرے گا ۔جمعیت کے زیر اہتمام اے پی سی میں طلبہ یونین کی بحالی، یکساں نظام تعلیم اور کوٹا سسٹم کے خاتمے کے لیے مل کر جدوجہد کرنے پر اتفاق کیا گیا ۔کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسلامی جمعیت طلبہ حیدرآباد ڈویژن کے ناظم سعد احسن قاضی کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کے باعث تعلیمی ادارے بند ہونے سے طلبہ کا مستقبل خطرے سے دوچار ہے لیکن اب حالات بہتری کی طرف جارہے ہیں لہذا حکومت تعلیمی اداروں کے حوالے سے ایس او پیز اور حکمت عملی کا اعلان کرکے تعلیمی اداروں میں تدریسی عمل بحال کرے ۔سعد احسن قاضی کا مزید کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کے دوران حکومت کا تعلیمی ادارے بند رکھنے کے علاوہ کوئی اور بات نہ کرنا اس بات کی دلیل ہے کہ حکمرانوں کے نزدیک شعبہ تعلیم کوئی اہمیت نہیں رکھتا۔ ناظم حیدرآباد جمعیت حمزہ مشتاق نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اس وقت طلبہ کئی مسائل سے دوچار ہیں ایسے وقت میں طلبہ نمائندوح کا ایک جگہ بیٹھنا اور مشترکہ موقف اختیار کرنا نہایت خوش آئندہ ہے طلبہ مسائل کے حل کے لیے جمعیت نے ہمیشہ آگے بڑھکر کام کیا ہے۔انہوںنے کہاکہ تعلیمی سرگرمیوں کی بحالی کے لیے تمام تنظیمیں ایک ہوکر کوشش کریں گی۔ اے پی سی میں جعفریہ اسٹوڈنس آرگنائزیشن، جمعیت طلبہ اسلام، پیپلز اسٹوڈنٹس فیڈریشن، پاک سرزمین اسٹوڈنٹس فیڈریشن، اے پی ایم ایس او اور اصغریہ اسٹوڈنٹس فیڈریزن سمیت دیگر طلبہ تنظیموں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ناظم جمعیت حیدرآباد حمزہ مشتاق نے تمام پارٹیوں کا شکریہ ادا کیا۔

By | 2020-07-05T19:59:54+00:00 July 5th, 2020|Latest News|0 Comments

Leave A Comment